الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا رسول اللہ الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا حبیب اللہ
Subscribe: PostsComments

سالانہ جشنِ مولودِ کعبہ فیصل آباد

May 25, 2013

عالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشانِ اسلام (رجسٹرڈ) فیصل آباد کے زیرِ اہتمام آستانہ عالیہ پر حضرت علی ؑ کے سالانہ جشنِ ولادتِ باسعادت کا عظیم الشان روح پرور پروگرام نہایت تزک و احتشام سے امیر فیصل آباد حاجی محمد سلیم قادری کی زیر صدارت منعقد کیا گیا ۔اس عظیم الشان محفل پاک میں نقابت کے فرائض محمد شفیق قادری اور محمد افضال قادری نے سرانجام دئیے ۔محفل پاک کا باقاعدہ آغاز تلاوتِ کلامِ مجید کی معطر،مطہر ، نورانی آیہء مبارکہ سے جناب قاری طارق محمود قادری نے کیا ۔اسکے بعد بارگاہِ رسالتِ مآبﷺ میں عقیدت و محبت کے نذرانے محمد حسن قادری،رامش احمد،ڈاکٹر عابد کمال،زین بن ارشد،فیصل شوکت،اصغر چشتی،ناظر حسین اور عبدالمنان قادری نے بڑے ہی والہانہ انداز میں پیش فرمائے اور حاضرین کے دلوں میں عشقِ مصطفیﷺکو مزید فروزاں کیا۔مولا علی ؑ مشکل کشاء کی بارگاہِ اقدس میں عبدالعزیز قادری نے منقبت کا نذرانہ پیش کیا۔ممبر مجلس شوری ٰحاجی محمد اویس قرنی نے نئے ساتھیوں کی کثیر تعداد کو اجازتِ ذکرِ قلب کی نایاب دولت عظمیٰ سے نوازا۔زین بن ارشد نے اپنے مخصوص انداز میں حضور غوث الثقلینؓ کے حضور ہدیہء منقبت پیش کیا۔
معزز مہمانانِ گرامی میں جناب محترم محمد اسماعیل سہروردی(سیکرٹری جنرل،سلسلہ سہروردیہ ،فیصل آباد)،جناب اسرار احمد چشتی ایڈووکیٹ کے علاوہ وحید انور قادری ،حاجی محمد اصغر قادری ،غفار احمدقادری (اوکاڑہ)شامل تھے۔محمد اسماعیل سہروردی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے فرمایا کہ میں یہاں آکر انتہائی خوش ہوا ہوں کیونکہ آپ کا یہاں آنا آپکے مُرشد کی نظر کرم کے طفیل ہے۔ اللہ تعالیٰ نے صحابہء اکرام کو جداگانہ شان و شوکت سے نوازا ۔حضورﷺنے حضرت ابوبکر صدیقؓ کے بارے میں ارشاد فرمایاکہ میں نے دنیا میں ہر ایک کا حق ادا کردیا اور ابوبکرؓ کا حق روزِ قیامت میرا رب ہی ادا کرے گا۔مزید فرمایاکہ میری زبان میں صدیقؓ بولتا ہے اور رب کی زبان میں عمرؓبولتا ہے۔حضرتِ عثمانِ غنیؓشرم و حیاء کے پیکر ہیں اور جہاں عثمانؓدفن ہوں گے اللہ تعالیٰ میری ﷺاور عثمانؓ کی قبر کا درمیانی علاقہ بخش دے گا۔اسی طرح حضرت علی ؑ کا مقام و مرتبہ سب سے جداہے۔اللہ تعالیٰ نے میرے علی ؑ کو کعبہ سے پیدا فرمایااور حضرت علی ؑ کی شادی حضرتِ بی بی فاطمتہ الزہراہ سلام اللہ علیہاسے کر واکر آپکے مرتبہ کو اور بھی بلند کردیاکیونکہ ایک طرف رحمتہ العالمینﷺکی بیٹی ہے تو دوسری طرف علم کے دروازہ ،شیرِ خدا،سیف اللہ جیسے القابات کے حامل مولا علی ؑ مشکل ہیں ۔یہ اعزاز کسی اورکے حصہ میں نہ آئے گا۔انہوں نے مزید فرمایاکہ حضرت علی ؑ کی خاطر اللہ تعالیٰ نے اپنے قوانین کو تبدیل فرمادیا کہ آپکی خاطرسورج کو واپس عصر کے مقام پر پہنچادیا اور آپ نے عصر کی نماز ادا فرمائی۔حضرت علی ؑ فرماتے ہیں کہ “دولت ،شہرت اور اختیار ملنے کے بعد انسان بگڑتا نہیں بلکہ اپنی اصلیت میں آجاتا ہے ” حضرتِ علی ؑ کا جشن ولادت منانااہلِ ایمان کے لئے سعادت کا باعث ہے اور یہ محافل ہمارے دلوں میں عشقِ رسولﷺاور عشقِ صحابہؓ پیدا کرتی ہیں اور مُرشد راہِ حق کیلئے ہمارے دلوں میں عشقِ مصطفیﷺپید ا کرتے ہیں۔مُرشد کی محبت،نبی ﷺکی محبت اور نبی پاک ﷺکی محبت اللہ تعالیٰ کی محبت ہے۔محبت کے تین تقاضے ہوتے ہیں 1۔مثل حبیب اپنے چہرے لباس،کردار،عادات و اطوار کو مُرشد کے مثل کر لو۔2۔ذکرِحبیب اپنے قلب اور زبان سے ہر وقت مُرشد کا ذکرِ خیر کیا جائے۔3۔وصلِ حبیب سیّد قلندر علی سہروردی ارشاد فرماتے ہیں “مرشد وہ ہے جو ہر وقت مرید کو ساتھ سمجھے اور مُرید وہ ہے جو ہر وقت مُرشد کو ساتھ سمجھے اور آج بھی ایسے اللہ کے بندے ہیں جو مُرشد سے ہدایات لیتے ہیں اور وصلِ حبیب کا تقاضا ہے کہ ہم راتوں کو اُٹھ کر دعا کریں یا اللہ !ہمیں اپنے محبوب کا دیدار ہی کروا دے۔
جناب اسرار احمد چشتی ایڈووکیٹ نے اپنے خیالات کا اظہار خیال کرتے ہوئے فرمایا کہ چند روز پہلے میری انجمن سرفروشانِ اسلام کے نوجوانوں سے مُلاقات ہو ئی انکی محبت ، اُنکا مخلص پن، اُنکی اخوت،اُنکا بھائی چارہ مجھے یہاں کھینچ لایااور خوشی ہوئی کہ آج یہاں مولا کا جشن منایا جارہا ہے ۔آپکی ولادت باسعادت آپ سب کو میری طرف سے مبارک ہو۔دل کی بات یہ ہے کہ میرا رب فرماتا ہے کہ میں نے قرآن کو حضورﷺکے قلب اطہر پراتارا۔اگر پہاڑ،چوٹی،کسی ٹیلے یا بلند مقام پر اتارتا تو وہ ریزہ ریزہ ہو جاتا ۔اللہ تعالیٰ نے پوری کائنات میں محمد ﷺکا دلِ مبارک چنا۔آپ کے مُرشد نے بھی اللہ کے نام کیلئے دل ہی چنا ہے۔مرشد نے آپکو اللہ کا نام دے دیا ہے کہ آپ کے دل میں سما جائے۔انہوں نے مزید فرمایا حضرت علی ؑ اللہ کے محبوب ﷺکے محبوب ہیں ۔حضرت عائشہؓ کے دریافت کرنے پر حضورﷺنے فرمایاکہ مردو ں میں حضرت علی ؑ اور عورتوں میں میری بیٹی فاطمہؓ مجھے سب سے زیادہ عزیزہیں ۔ایک دفعہ حضورﷺ نے حضرت علی ؑ سے فرمایاکہ ایک کام میں تم (علیؓ)بھی مجھ سے سبقت لے گئے ہو ۔دریافت کرنے پر فرمایاتمہاری بیوی جیسی میری بیوی نہیں۔تمہارے سسر جیسا میرا سسر نہیں۔اس لئے تم مجھ سے سبقت لے گئے ہو۔ایک دفعہ حسنین کریمین نے دریافت فرمایاکہ نانا ہم افضل ہیں کہ آپﷺ؟تو آپﷺنے فرمایاکہ میں افضل ہوں۔عرض کیا گیا کہ نہیں! ہم افضل ہیں۔تو حضورﷺنے فرمایاوہ کیسے؟تو شہزادوں نے کہا کہ ناناہماری ماں جیسی آپکی ماں ہے ؟کہنے لگے نہیں۔ہمارے باپ جیساآپ کا باپ ہے؟ کہنے لگے نہیں ۔ہمارے نانا جیسا آپ کا نانا ہے؟ کہنے لگے نہیں۔تو شہزادوں نے عرض کی کہ ہم تو افضل ہوئے ہیں پھر آپﷺ سے۔انہوں نے مزید فرمایا کہ علی ؑ سے محبت رسولﷺسے محبت اوررسولﷺسے محبت اللہ تعالیٰ سے محبت ہے۔اس لئے علی ؑ تک پہنچنے کا وسیلہ آپ کے پیرومرشد ہیں اُن کو راضی کر لو تو علی ؑ راضی ہو جائیں گے اور علی ؑ راضی ہو گئے تو رسولﷺکی رضا حاصل ہو جائے گی اورجب حضورﷺکی خوشنودی حاصل ہو گئی تو پھر رب کی رضا بھی راضی ہو جائیگی۔ انہوں نے آئندہ بھی محفل پاک میں شرکت کی خواہش کا اظہار کیا۔
آخر میں قبلہء عالم حضرت سیّدنا ریاض احمد گوھر شاھی مدظلہ العالی کی شانِ اقدس میں ہدیہء قصیدہ کی سعادت عبدالعزیز قادری نے حاصل کی۔ امیر فیصل آباد حاجی محمد سلیم قادری نے امیر حلقہ کے فرائض سرانجام دئیے۔درودو سلام کانذرانہ زین بن ارشد ،ناظر حسین اور عبدالعزیز قادری نے پیش کیا ۔اختتامی دعاحاجی محمد اویس قرنی نے کروائی۔بعد از محفل حاضرین کیلئے لنگرشریف کا خصوصی انتظام کیا گیا تھا۔
جاری کردہ
شعبہ نشرو اشاعت فیصل آباد

1 2 3 4 5 6 7 8 9 10

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestmailby feather
انجمن سرفروشان اسلام (رجسٹرڈ) پاکستان