الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا رسول اللہ الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا حبیب اللہ
Subscribe: PostsComments

سالانہ جشنِ ولادتِ گوھر شاھی مد ظلہ العالی

November 25, 2014

عالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشانِ اسلام(رجسٹرڈ)پاکستان، فیصل آباد کے زیرِ اہتمام آستانہ عالیہ فیصل آباد پر سالانہ روح پرور جشنِ ولادتِ گوھر شاھی مد ظلہ العالی کے سلسلے میں خصوصی محفلِ پاک کا انعقاد کیا گیاجس میں نقابت کے فرائض سابقہ امیرِ کوٹری جناب محمد نسیم قادری نے سرانجام دئیے۔اس بابرکت محفلِ پاک میں حمدِ باری تعالیٰ کی سعادت اطہر اقبال ببی نے حاصل کی ۔اسکے بعد بارگاہِ محبوبِ دوجہاں ﷺاور بارگاہِ غوثیتؓ میں رضوان اشرف قادری اور حافظ محمد عدیل قادری نے اپنی اپنی عقیدت کا اظہار کیا۔
محمد نسیم قادری نے اپنے گزرے ہوئے حسین لمحات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ آج مرشدِ پاک حضرت سیّدنا ریاض احمد گوھر شاھی مد ظلہ العالی کا جشنِ  ولادت ہے سرکار شاہ صاحب کے حوالے سے چند واقعات آپکے گوش گزار کروں گاکہ ہمیں اتنا اعلیٰ اور ایسا بلند پایا مرشد ملا کہجن کی مثال دنیا کی تاریخ میں نہیں ملتی دنیا ئے اسلام کی تاریخ پڑھ لیں ،انبیاء و اولیاء اکرام کی تاریخ کا مطالعہ کرلیں اس طرح عام لوگوں کو ،گنہگار لوگوں کو ایک نظر میں ذاکرِ قلبی بنادینا ،ایک ہی نظر میں ذاکرِ روحی بنا دینا کئی دفعہ تو ساتوں کے ساتوں لطائف چلا دیناکسی مردِ قلندر کو دیکھا نہیں گیاایسی کرم نوازی کرتے ہوئے ۔ایک ذاکرکافی عرصے سے مشن میں لگے رہے سرکار کی خدمت کرنی سرکار شاہ صاحب کے بچوں کی خدمت کرنی کافی عرصہ ہوگیا ذکر ہی نہیں چلتا تھاایک رات سرکار شاہ صاحب لان میں چہل قدمی فرما رہے تھے سرکا ر شاہ صاحب نے اس کو دیکھااور پوچھا کہ ذکر چلا ؟اس نے عرض کی نہیں سرکار!سرکار شاہ صاحب نے زور سے سینے پر ہاتھ مارااور فرمایا کہ چل چلتا کیوں نہیں سات کے سات لطائف چلا دئیے ۔ جب اوپر(پہاڑی)والا آستانہ بن رہا تھا تو ایک ذاکروہاں مزدوری کیا کرتا تھااُس ذاکر کا قلب بھی نہیں چلتا تھاایک دن اُس ذاکر کا دل نکل کے سامنے دیوار پہ جاکے بیٹھ گیا  وہ شکل اُس شخص کی وہ صرف اُس نے ہی نہیں دیکھا کہ وہ باطن میں دیکھ رہا ہے بلکہ وہاں موجود دوسرے مزدوروں نے اُسے دیکھاکہ اُس دل پر اللہ لکھا ہوا تھاتھوڑی دیر یہ معاملہ ہوتا رہا پھر غائب ہو گیا جب شاہ صاحب سے اس کی بابت پوچھاگیا توقبلہ مرشدی نے فرمایا کہ یہ اندرہی اندر اتنا پک گیا تھا کہ سامنے آنے پر مجبور ہو گیا۔اس طرح کے ہزاروں واقعات ہیں جو کہ ہر ذاکر کے ساتھ سرکار شاہ صاحب کی محبت اور کرم نوازی کا معاملہ جدا جدا ہے سرکار شاہ صاحب نے نہ صرف مسلمانوں کو بلکہ ہر مذہب کے لوگوں کو اسمِ ذات اللہ کے ذریعے اللہ تعالیٰ کے ذاتی نام سے روشناس کروایا اور واصل بااللہ کیااور یہی انجمن سرفروشانِ اسلام (رجسٹرڈ) کا پیغامِ خاص ہے کہ جہاں سے بھی یہ نایاب دولتِ عظمیٰ تمہیں میسر آجائے اس کو حاصل کرو اگر کہیں سے نہ مل سکے تو پھر ہمارے پاس آجاناہم تمہیں اللہ اللہ کے ذریعے اللہ تک پہنچا ہی دیں گے۔
بعد ازاں مرشدِ پاک  حضرت سیّدنا ریاض احمد گوھر شاھی مد ظلہ العالی کے حضورمحمود احمد ۔محمد رضوان قادری،محمد جمیل قادری اور میاں عبدالمنان قادری نے قصائد کے نذرانے پیش فرمائے ۔امیرِ فیصل  آباد حاجی محمد سلیم قادری نے حلقہء ذکر کو ترتیب دیا۔کیک کاٹنے کی پر لطف تقریب منعقد کی گئی اور فضا تیرا شاھی میراشاھی گوھر شاھی گوھر شاھی کے حسین اور دلفریب نعروں سے گونج اُٹھی اور ذاکرین نے والہانہ انداز میں جھوم جھوم کو اپنی عقیدت و محبت اور چاہت کا اظہار کیا اور مرشدِ پاک سے اس مشنِ عظیم کو ہر زی روح تک پہنچانے کا عزمِ صمیم کیا۔دعا ہے مرشدِ پاک کی ذاتِ والا صفات ہم سب سے راضی ہو جائیں اور ہمہ وقت ہمیں اپنی نوری نظر میں رکھیں تاکہ ہم گنہگاردنیا وی شیطانوں کے چنگل سے محفوظ رہ کر دنیا اور آخرت کی بھلائی حاصل کرسکیں ۔اختتامِ محفل پر لنگر کا پر تکلف انتظام کیا گیا تھا۔

ok DSC_0060 DSC_0059 DSC_0056

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestmailby feather
انجمن سرفروشان اسلام (رجسٹرڈ) پاکستان