الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا رسول اللہ الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا حبیب اللہ
Subscribe: PostsComments

شب بیداری بسلسلہ شب ِمعراج النبیﷺ

April 24, 2017

ہرسال کی طرح امسال بھی آستانہ عالیہ عالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشان ِاسلام (رجسٹرڈ)فیصل آباد پر شب ِمعراج کے مقدس اور بابرکت موقع پر خصو صی محفل ِپاک کا انعقاد کیا گیا جس میں نقابت کے فرائض ڈاکٹر محمد مشتاق قادری نے سرانجام دئیے۔انہوں نے بڑے ہی خوبصورت انداز میں سرکار مدینہ سرور ِقلب و سینہ ،احمد ِمجتبی ﷺ،حضرت محمد ِمصطفی ﷺکے واقعہ ٔمعراج کو بیان کیا۔محفل ِپاک کا باقائدہ آغاز صلوٰۃ التسبیح کے بعد تلاوت ِکلام ِمجید سے قاری طارق محمود قادری نے کیا۔اسکے بعد حمد ِباری تعالیٰ ،نعت ِرسول ِمقبول ﷺ،منقبت ِغو ث الورائؓاور قصیدۂ مرشدی کی سعادت ڈاکٹر محمد ناصر قادری،منصب علی قادری ،محمد جمیل قادری ،عبدالعزیزقا دری نے حاصل کی ۔چیئر مین مرکزی مجلس ِشوری ٰ حاجی محمد اویس قادری نے نئے ساتھیوں کو اجازت ِذکر ِقلب سے نوازا۔ممبر مرکزی مجلس ِشوری ٰحاجی محمد اصغر قادری نے محفل ِذکر ِلطائف کو ترتیب دیا۔درودوسلام کے بعد اختتامی دعاسینئر رہنما وحید انور قادری نے کروائی۔بعد از محفل ِپاک تمام حاضرین کی لنگر سے تواضع کی گئی ۔
ان مبارک ساعتوں کی بابت اظہار ِخیال کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد مشتاق قادری نے کہا جب اللہ تعالیٰ نے حضرت ِجبرائیل ِامیں ؑکو حکم دیا کہ میرے محبوبﷺکو میرا پیغام دیں کہ اللہ تعالیٰ آپ ﷺکی دید کا مشتاق ہے تو جبرائیل امیں! ؑآپ ﷺکے پاس حاضر ہوئے تو حضور ﷺآرام فرما رہے تھے ۔جبرائیل ِامیں ؑنے اللہ تعالیٰ سے عرض کی کہ مولا!تیرے محبوب ﷺکو کیسے جگائوں ؟حکم ہوا کہ اپنے کافوری ہونٹ میرے محبوبﷺکے تلوئوں سے مَس کروتو جب حکم کی بجاآوری ہوئی تو حضور ﷺبیدار ہوگئے تو دریافت فرمایاکہ جبرائیل ؑکیا بات ہے ؟عرض کی میرے آقاﷺ!رب تعالیٰ کی طرف سے بلاواآیا ہے ۔تو رحمتہ العالمین ﷺنے براق کے ذریعے مسجد ِنبوی سے مسجدِاقصی ٰکا سفر فرمایا۔دوران ِسفر آپ ﷺ نے حضرت موسیٰ ؑکو اپنی قبر میں نماز پڑھتے ہوئے پایا ۔مسجد ِاقصیٰ میں تمام انبیاء کی امامت فرمائی اور آپ ﷺوہاںسے عرش کی طرف محو ِسفر ہوئے ۔ آسمانوں سے آگے جب براق اور جبرائیل امیں ؑآپﷺکا ساتھ چھوڑ جاتے ہیں کہ اس سے آگے ہم نہیں جاسکتے تو وہاں پر حضور غوث ِپاک ؓ کی روح مبارکہ آپﷺکو رب کی بارگاہ تک پہنچاتی ہے۔اس موقع پر نبی آخرالزماں ﷺنے غوث ِپاک ؓ سے ارشاد فرمایااے عبدالقادر!آج میرا قدم تمہارے کندھوں پر ہے اور کل تمہاراقدم تمام اولیاء کے کندھوں پر ہوگااور فرمایا کہ تمہارا مقام اولیاء اللہ میں ایسا ہے جیسا میرا مقام تمام انبیاء میں ہے۔ کعبہ ٔ قو سین پرجب نور نور سے واصل ہو گیا تو نہ بندہ رہا اور نہ بندہ نواز۔اللہ تبارک وتعالیٰ نے اپنے محبوبﷺکوجنت ،دوزخ،عرش و کرسی کی سیر کروائی ۔اللہ تبارک وتعالیٰ کی طرف سے پانچ نمازوں کا تحفہ دیا گیا۔اس موقع پر نبی پاک ﷺنے اللہ تعالیٰ سے عرض کی کہ مولا!مجھے تو ،تو نے اپنا دیدار کرادیا لیکن اگر میرا کوئی اُمتی تیرا دیدار کرنا چاہے تو؟تو رب تعالیٰ نے ارشاد فرمایا۔اے میرے پیارے حبیبﷺ!میں نے تمہیں اسم ِذاتــ” اللہ” عطاء کیا ہے جس کی وجہ سے تم میرے دیدار کے قابل ہوئے ورنہ موسیٰ کوہِ طورپر مجھ سے صرف ہمکلام ہوتا تھااور وہ میری ایک معمولی تجلی کی تاب نہ سکااوربے ہوش ہو گیا۔محبوبﷺ!تو میر ے سامنے موجود ہے ۔پتہ یہ چلا نماز اور ذکر ِالٰہی سے بندہ رب تک رسائی حاصل کرسکتا ہے۔ ہمارے پیارے آقاﷺ!کو اسم ِذات اللہ عطاء ہو ااور اس امت کو اسم ِذات کا فیض عطاء کیاگیا تاکہ وہ اپنے باطن کو روشن و منور کرکے رب کی بارگاہ تک پہنچ سکے ۔اسی لئے ایک مرتبہ کسی نے حضرت علیؓسے پوچھا کہ آپ ؓنے کبھی رب کا دیدار کیا ہے تو فرمایا میں اُس وقت تک دوسرا سجدہ ہی نہیں کرتا جب تک رب کا دیدار نہ کرلوں ۔سبحان اللہ ۔اسی اسم ِذات اللہ کی وجہ سے اس امت کے ولی رب کے دیدار کو پہنچے ۔سلطان الفقراء حضرت سخی سلطان ِحق باھو ؒفرماتے ہیں کہ میں نیچے دیکھتا ہوں تو مخلوق نظر آتی ہے اور اوپر دیکھتا ہوں تو رب نظر آتا ہے ۔یہ شان ہے محبوب ﷺکے امتیوں کی تو محبوبﷺکی شان کیا ہو گی ؟۔حضور ﷺنے ایک موقع پر ارشاد فرمایا۔کہ میری حقیقت میرے رب کے سوا کو ئی نہیں جانتا۔کہ بعد از خدا بزرگ توئی قصہ مختصر۔عزیز ساتھیو!انجمن سرفروشان اسلام بھی آج آپ کو یہی نقطہ سمجھارہی ہے کہ اگر ہر چیز سے بے نیاز ہو کر فقط اللہ ،رسول کی رضا کے لئے اور اُس تک پہنچنے کیلئے تمہیں کسی راستے کی تلاش ہے تو وہ انجمن سرفروشان ِاسلام ہے کہ جو طالبین ِحق کو اسم ِذات اللہ کی دعوت بغیر کسی لالچ اور طمع کے دے رہی ہے کہ آئو اور اسم ِذات اللہ کی بوٹی اپنے دل میں لگائو ۔اسے نفی اثبات (لاالہ الا اللہ )کا پانی دو اور اسے تناور درخت بنائو ناصرف خود اس نایاب دولت ِعظمی ٰ سے فیض یاب ہو بلکہ تمام عالم ِانسانیت تک اس محبت بھرے پیغام کو پہنچانے کے لئے ہمارے ساتھ شانہ بشانہ چلو۔مرشد ِپاک حضرت سیدنا ریاض احمد گوھر شاھی مدظلہ العالیٰ نے بغیر رنگ و نسل و مذہب ،پوری دنیا میں اس اللہ ھو کے پیغام کو پہنچایا تمام عالم ِانسانیت کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کیا اور آج یہ لوگ مختلف قبیلوں اور علاقوںسے کٹ کر دل سے ایک ہو گئے ۔قبلہ مرشد ِگرامی ارشاد فرماتے ہیں جس کا مفہوم یہ ہے کہ زبان سے سارے ہی کہہ دیتے ہیں کہ ہم ایک ہیں لیکن اصل میں ایک ہونے کا تعلق دل سے ہے ہم نے ان کے دلوں میں اللہ کا نام پیدا کردیا چونکہ اللہ سب کا ہے بھلے کوئی کسی مذہب یا فرقہ سے تعلق رکھتا ہولیکن جب سب کے دل اللہ اللہ کرنا شروع ہو گئے تو اب یہ کہتے ہیں امتی ہو ں تمہارا یا رسول اللہﷺ!دعاہے کہ اللہ رب العزت ہماری آج کی حاضری کو اپنی بارگاہ ِاقدس میں مقبول و منظور فرمائے ۔آمین۔

26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (3) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (2) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (1) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (13)26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (4) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (8) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (7) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (6)26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (9) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (12) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (11) 26-04-2017 Mehfil e Shab e Meraj Aastana ASI Fsd (10)

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestmailby feather
انجمن سرفروشان اسلام (رجسٹرڈ) پاکستان