الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا رسول اللہ الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا حبیب اللہ
Subscribe: PostsComments

ماہانہ روح پرورمحفل ِگیارھویں شریف بسلسلہ سالانہ یوم ِقلندر پاکؒ

May 12, 2017

      عالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشان ِاسلام (رجسٹرڈ)فیصل آباد کے زیر ِاہتمام آستانہ عالیہ عالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشان ِاسلام پر سالانہ روح پرورمحفل ِگیارھویں شریف بسلسلہ یوم ِقلندر پاک ؒنہایت تذک و احتشام سے منعقد کی گئی ۔اس محفل ِپاک کی صدارت امیر ِفیصل آباد حاجی محمد سلیم قادری نے کی ۔دیگر قائدین میں چیئر مین مرکزی مجلس ِشوریٰ حاجی محمد اویس قادری ،ممبرمرکزی مجلس ِشوریٰ حاجی محمداصغر قادری شامل تھے ۔ اس محفل ِ پاک میں نقابت کے فرائض محمد افضال قادری ،ڈاکٹر محمد مشتاق قادری اور عبدالعزیزقادری نے سرانجام دئیے۔محفل ِپاک کا باقاعدہ آغاز حمد ِباری تعالیٰ سے محمد رفیق قادری نے کیا۔اسکے بعد بارگاہ ِمحبوب ِدوجہاں ﷺمیں نعت ِرسول ِمقبول ﷺ،بارگاہ ِقلندر پاک ؒ،بارگاہ ِغو ثیتؓمیں نذرانۂ منقبت اور مرشد ِپاک کے حضور نذرانۂ قصیدہ کی سعادت محمد بشیر قادری ،افسر علی رضوی ،میاں عبدالمنا ن قادری ،فرزند علی قادری،محمد اعجاز برھانی ،حبیب احمد جیلانی،طارق محمود طارق اورمحمد ذیشان قادری نے حاصل کی ۔چیئر مین مرکزی مجلس ِشوریٰ حاجی محمد اویس قادری نے نئے ساتھیوں کو اجازت ِذکر ِقلب سے نوازا۔امیر ِحلقہ حاجی محمد سلیم قادری نے ترتیب دیا ۔درودوسلام کے بعد خصوصی دعا چیئر مین مرکزی مجلس ِشوریٰ حاجی محمد اویس قادری نے کروائی جس میں ملک ِخداداد پاکستان کی ترقی و خوشحالی ،امن و امان کے قیام اور وطن ِعزیز پاکستان میں انصاف پسند اور مومن قسم کے لوگوں کی حکمرانی کے لئے خصوصی دعا کی گئی ۔محفل ِپاک کے اختتام پر تمام شرکاء میں لنگر تقسیم کیا گیا۔
اس پرمسرت موقع پر انچارج پروگرام کمیٹی محمد افضال قادری نے اظہار ِخیال کرتے ہوئے کہا کہ
تمنا درد ِدل کی ہو تو کر خدمت فقیروں کی نہیں ملتا یہ گوھر بادشاہوں کے خزینوں میں
انہوں نے کہا کہ ہم نے آج کی یہ پر وقارتقریب سعید حضرت سید عثمان مروندی المعروف حضرت لعل شہباز قلندر ؒکے سالانہ عرس مبارک کے موقع پر آستانہ انجمن سرفروشان ِاسلام فیصل آباد پر منعقد کی ہے ۔آپؒ کا تمام کا تمام فیض دھمال کے اندر تھا جب دھمال ڈالی جاتی تو لوگ ایک ٹانگ کو اُٹھاتے اللہ کہتے دوسری کو اُٹھاتے ھو کہتے اللہ ھو اللہ ھو اللہ ھو کہتے ۔جب لوگ دھمال ڈالتے تو اُن کے دل بھی اللہ اللہ کرتے ۔دل کی ایک دھڑکن کے ساتھ اللہ اور دوسری کے ساتھ ھو کہتے ۔آج بھی جب مغرب کی نماز کے بعد نوبت بجتی ہے تو بندہ خود بخود جھومناشروع ہو جاتا ہے ۔اصل میں جب روح جھومتی ہے تو پھر جسم بھی جھومتا ہے ۔جب روح سرشار ہو تی ہے تو جسم کو بھی شادمانی ملتی ہے ۔جب روح کو سکون ملتا ہے تو جسم کو بھی سکون ملتا ہے ۔اگر انسان اپنی مرضی سے پیدا نہیں ہو سکتا ۔اپنی مرضی سے جی نہیں سکتا ۔اپنی مرضی سے سانس نہیں لے سکتا ،قدم نہیں اُٹھا سکتا ،بول نہیں سکتا ،دیکھ نہیں سکتا حتیٰ کہ اپنی مرضی سے مَر نہیں سکتا تو اس کے جینے اور مرنے کے درمیان جو زندگی ہے وہ اپنی مرضی سے کیوں گزارتا ہے ؟انسانی جسم کے اندر روحوں کے متعلق ان کا کہنا تھا کہ جب ماں کی کوک کے اندر بچہ نو(9)مہینے رہتا ہے تو سب سے پہلے اس کے اندر روح ِجمادی ڈالی جاتی ہے ۔اس کے بعد روح ِنباتی ڈالی جاتی ہے ۔پھر روح ِحیوانی ڈالی جاتی ہے اور آخر میں روح ِانسانی ڈالی جاتی ہے۔جب بچہ پیدا ہو جاتا ہے ۔اُس کی دائیں مٹھی بند ہو تی ہے اسکے ہاتھ میں وہ عہدوپیمان ہوتاہے ،وہ معاہدہ ہوتا ہے جو روح رب تعالیٰ کی ذات کے ساتھ کرکے اس دنیا کے اندر آتی ہے ۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ وہ ایگریمنٹ جو اس کا خالق و مالک کے ساتھ ہو تا ہے ۔ دنیا کی لذات کے اندر ،دنیاکی خواہشات کے اندرگم ہو کر یہ انسان اُس عہدوپیمان کو بھول جاتا ہے ۔دنیا کی رنگینیوں کے اندر اس قدر انسان مگن ہو جاتا ہے کہ وہ خالق ِحقیقی کو بھول جاتا ہے ۔حضرات ِمحترم !آج ہم بھٹکے ہو ئے ہیں۔آج ہم بھولے ہوئے ہیں۔انجمن سرفروشان ِاسلام آپ کو راستہ دکھا رہی ہے بلکہ وہاں تک پہنچا رہی ہے ۔اس محبت بھرے پیغام کو پہنچارہی ہے کہ آئو لوگو!اگر تم رسول اللہ ﷺکی بارگاہ میں پہنچناچاہتے ہو ،اللہ کے قرب کو حاصل کرناچاہتے ہو تو درگوھر شاھی پر حاضر ہو جائوجب تم در گوھر شاھی پر آجائو گے تورسول اللہ ﷺکا در بھی نصیب ہو جائے گا اور رب کی بارگاہ تک بھی تمہاری رسائی ہو جائے گی۔
مشیر نشرواشاعت عبدالعزیز قادری نے کہا کہ سرکار فرماتے ہیں کہ جب اللہ کا ولی اُس کے روبرو پہنچ جاتا ہے توہم نے بہت سارے ایسے ولی دیکھے ہیںجو اللہ کی بارگاہ میں پہنچے لیکن اُن میں واحد شخصیت قلندر پاک ؒکی ہے جو اللہ کی بارگاہ میں پہنچے تو اُس وقت بھی وہ مستی الستی میں تھے اور اسی مستی الستی میں اللہ کی بارگاہ میں بار بار عرض کررہے ہیں کہ یا اللہ !مجھے اپنا دیدار اور عطاء فرمادے ،مجھے اپنا دیدار اور عطاء فرمادے۔پھر سرکار فرماتے ہیں کہ جب دریائے چناب کے کنارے پر سلطان العارفین ،برہان الواصلین ،مقتداء الکاملین کا پہلا مزار مبارک واقع تھا ۔(اگر آپ تاریخ کا مطالعہ کریں تو پتہ چلے گا کہ سلطان صاحب ؒکا یہ دوسرامزار مبارک ہے) ایک بار حضرت خضر ؑآپ ؒ کے پاس تشریف لاتے ہیں اور کہتے ہیں کہ دریا اپنا رخ تبدیل کر رہاہے لہٰذاآپ ؒ یہاں سے کسی اور جگہ تشریف لے جائیں ۔سلطان صاحب ؒاپنے چاہنے والے کی خواب میں آتے ہیں اور اُسے فرماتے ہیں کہ ہمیں یہاں سے نکالواور کسی اور جگہ لے جائو۔اُس بندے نے سوچا ٹھیک ہے ۔اُس نے سوچاکہ میں نکالتا ہوں ۔پھر سوچنے لگ گیا کہ میں کیسے نکالوں؟آپ ؒ پھر خواب میں آجاتے ہیں ۔فرمایا دریا کے کنارے پر ایک تابوت رکھ دینا ہم خود ہی اُس میں آجائیں گے ۔یہ حکم جب سنا ۔ابھی اس حکم کی تعمیل نہیں ہو ئی ۔پھر ذہن نے سوچا تابوت میں تو آپؒآجائیں گے لیکن لے کے کہاں جائوں گا؟اگلی رات پھر سلطان صاحب ؒخواب میں آتے ہیں اور فرماتے ہیں تواس طرح کرنا ایک اونٹنی کے اوپر اُس تابوت کو رکھ دینا جہاں اونٹنی پہنچے وہیں پر میرا مزار بنا دینا۔اورآج جو مزار شریف ہے یہ وہیں پر ہے ۔ اچھا اُنہیں دنوں دریائے سندھ بھی اپنا رُخ تبدیل کرنا چاہتا ہے ۔اور خضر ؑقلندر پاک ؒکی بارگاہ میں پہنچ جاتے ہیں انہیں بھی کہتے ہیں کہ دریا اپنا رُخ تبدیل کر رہا ہے ۔سلطان باھو ؒکو میں نے کہا تھا کہ آپ ؒ کہیں اور تشریف لے جائیں انہوں نے اپنا بندوبست کہیں اور کر لیا ہے تو دریائے سندھ بھی اس وقت اپنا رُخ چینج کر رہاہے تو آپ ؒبھی کسی اور جگہ تشریف لے جائیں ۔سرکار فرماتے ہیں کہ قلندر پاک ؒنے پتہ کیا کہا ۔قلندر پاک ؒفرماتے ہیں کہ خضر ؑبات یہ ہے کہ ابھی تم نے سلطان دیکھاہے ،قلندر نہیں دیکھا۔قلندرپاک ؒخضر ؑسے یہ بات کر رہے ہیں اور اللہ کی بارگاہ میں پہنچ کر بھی مست الست رہتے ہیں ۔اب یہ اپنا تعارف کیسے کرواتے ہیں ؟اتنی شان و شوکت سے جو رب نے نوازا ہے تو آپ ؒارشاد فرماتے ہیں ۔
حیدری ام قلندرم مستم ،بندہ ٔ مرتضیٰ علی ہستم پیشوائے تمام رندانم کہ سگ ِکوئے شیر ِیزدانم
پھر ایک شاعر بڑا خوبصورت شعر لکھتا ہے کہ
ہر دور میں کوشش تو بہت کی گئی لیکن کوزے کے مقدر میں سمندر نہیں آیا
یہ دنیا کیا سمجھے گی حسین ابن ِعلی ؑکو دنیا کی سمجھ میں تو قلندر نہیں آیا
اور یہ کیسے آسکتے ہیں ۔سرکار قبلہ گوھر شاھی مدظلہ العالی ایک نجی نشست میں ارشاد فرماتے ہیں( کہ جب سرکارپنجاب کے ٹور پر آتے ،مشن کے لئے کہیں بھی چلے جاتے یہاں تک کہ باہر بھی چلے جاتے تو آپ لوگوں کو پتہ ہے کہ کوٹری شریف میں ڈیوٹی پر کون معمورہو تا تھا؟) کہ اُس وقت ساری ڈیوٹی پھر قلندر پاکؒ کی ہوتی تھی اور قلندر پاک ؒاُس وقت کوٹری شریف آستانے پر ڈیوٹی دیتے تھے ۔حاضرین محترم !کتنا عظیم مرشد ملا ہمیں کہ جس نے اتنی پاک ہستیوں سے ہمیں منسوب کر دیا ،اس قدر پاک ہستیوں کا ادرا ک ہمیں سمجھادیا۔یہ پاک ہستیاں عام نہیں ہیں ۔اللہ رب العزت کی قسم !یہ مقدس ہستیاں جب کسی کے لئے اپنے دست ِمبارک کو رب کی بارگاہ میںاُٹھا لیتی ہیں تو اُس کا بیڑاپار ہو جاتا ہے۔پہلے تو کسی کے بارے میں برا نہیں چاہتے لیکن اگر یہ کسی کے بارے میں گمان کر بیٹھیں تو غوث پا ک ؒکی بابت ایک واقعہ آپ کی نذر کرتا ہوں۔حضور غوث ِپاک ؒ اپنے ایک مرید کے ساتھ جنگل میں جا رہے ہیں ایک پرندہ آتا ہے اور آپ ؒ کے کپڑوں پربِیٹھ کر دیتا ہے ۔آپ ؒاُسے صاف کر دیتے ہیں ۔ابھی آپ ؒ تھوڑی دور ہی جاتے ہیں تو وہ پرندہ زمین پر گرتا ہے اور اُس کا سر تن سے جدا ہو جاتا ہے ۔وہ مرید عرض کرتا ہے کہ یا حضرت !آپ ؒنے اس معصوم پرندے کو بددُعادے دی۔فرمایا میں نے بددُعانہیں دی لیکن یا د رکھو!قیامت تک آنے والی نسلوں کو ،قیامت تک آنے والے لوگوں کویہ بات بتا دوجو کوئی میری شان میں گستاخی کرے گا اللہ اُس کے ایمان کا سَر اِسی طرح قلم کر دے گا۔یہ مرشد ِپاک حضرت سیّد نا ریاض احمد گوھر شاھی مدظلہ العالی کا بڑا کرم ہے کہ ہمیں ان لجپال ہستیوں سے ملا دیا ۔
مزید برآں سیّداطہر حسین بخاری نے دعوت ِذکرو فکر دیتے ہوئے کہا کہ آئیں ان مقدس ہستیوں سے وابسطہ ہو جائیں ۔آج کے دور میں عصر ِحاضر کی عظیم روحانی شخصیت مرشد ِپاک حضرت سیّد نا ریاض احمد گوھر شاھی مدظلہ العالی نے ہم جیسے گنہگاروں ،خطاکاروں اور سیاہ کاروں کے دلوں کو اسم ِذات اللہ کے ذکر سے پاک و صاف کرکے اللہ کی بارگاہ میں پہنچا دیااگر آپ بھی اُس پاک بارگاہ میں پہنچنا چاہتے ہیں اور ان پاک ہستیوں سے اپنا رابطہ استوار کرنا چاہتے ہیں تو اجازت ِذکر ِقلب حاصل کرکے بتائے ہوئے طریقے پرخلوص ِدل سے عمل پیر ا ہوں ۔انشا ء اللہ آپ کا شمار میں رب کے نام لیوائوں میں ہوجائے گا۔اللہ تبار ک وتعالیٰ ہم سب کو عمل کرنے کی ہمت ،طاقت ،سعادت اور توفیق عطاء فرمائے ۔آمین۔

12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (5) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (10) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (7) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (6)12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (1) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (29) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (28) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (24)   12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (1) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (4) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (3) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (2)12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (12)12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (21) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (15) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (14) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (13)12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (16) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (19) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (18) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (17)12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (11) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (25) 12-05-2017 Salana Youm e Qalandar Pak. aastana ASI Fsd. (22)

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestmailby feather
انجمن سرفروشان اسلام (رجسٹرڈ) پاکستان