الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا رسول اللہ الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا حبیب اللہ
Subscribe: PostsComments

ماہانہ روح پرورمحفل ِگیارھویں شریف ستمبر 2017

September 8, 2017

ؑٓعالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشان ِاسلام(رجسٹرڈ)فیصل آباد کے زیر ِاہتمام امیر ِفیصل آباد حاجی محمد سلیم قادری کی زیر ِصدارت ہر ماہ کی طرح آستانہ پر حضور غوث ِپاک ؓ کی ذات ِبابرکات سے فیوض و برکات حاصل کرنے کے لئے اور اُن کی روحانی تعلیمات کو عوام الناس تک احسن طریقے سے پہنچانے کے لئے ماہانہ محفل ِگیارھویں شریف کا انعقاد کیا گیاجس میں نقابت کے فرائض غلام رسول قادری،اطہر حسین شاہ بخاری اورنسیم احمد آرائیںنے سرانجام دئیے۔یہ محفل ِپاک انچارج شعبہ پروگرام کمیٹی محمدافضال قادری کی زیر نگرانی منعقد کی گئی۔محفل ِپاک کاآغازنماز ِمغرب کی باجماعت ادائیگی کے بعد مناجات غوث الورائؓسے حاجی محمد اصغر قادری نے کیا۔اس کے بعد خصوصی دعامحمد اشرف قادری نے کرائی۔
اس روح پرور محفل ِپاک میں قاری طارق محمود قادری نے تلاوت ِکلام ِمجید پیش کی ۔اسکے بعد محمد بشیر قادری نے بارگاہ ِربوبیت میں حمد ِباری تعالیٰ کا نذرانہ پیش کیا۔نعت ِرسول ِمقبول بحضور سرورِکون و مکاں ﷺمحمد ذیشان قادری، ضیاء المجتبیٰ ،محمدعبید اشرف اورعبدالعزیز قادری نے پیش کی ۔منقبت ِغو ث ِپاک ؓمحمداعجازنے پیش کی ۔میاں عبدالمنان قادری نے خصوصی کلام اور قصائد ِمرشدی پیش کرکے حاضرین سے خوب دادوصول کی ۔حلقہ ٔذکرِالٰہی امیر ِفیصل آباد حاجی محمد سلیم قادری نے ترتیب دیا۔درودوسلام کے بعدتمام دنیا کے مظلوم مسلمانوں خصوصاًبرما(روہنگیا)کے مسلمانوں کے لئے خصوصی دعا کی گئی کہ اللہ تعالیٰ اُن پر اپنا فضل و کرم فرمائے اور اُن کی مشکلات کو دور فرمائے ۔اُن کی زندگیوں میں آسانیاں پیدا فرمائے اور ظالموں کو کیفرکردار تک پہنچائے ۔آمین۔بعد از محفل ِپاک لنگر کا خصوصی انتظام کیا گیا تھا۔
اس موقع پر جہاں پوری دنیامیں مسلمانوں کا کوئی پرسان ِحال نہیں ہے اور ہر جگہ جہاں غیر مسلم کا بَس چلتا ہے وہ مسلمانوں کو تکلیف پہنچانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑتا۔ ان نازک حالات میں یہ سوال جنم لیتا ہے کہ آخر خون ِمسلم ہی کیوں اتناارزاں ہو گیا ہے اور ہرجگہ پر اُن کے ساتھ انتہائی غیر مناسب رویہ رکھا جارہاہے اور مسلمانوں کو گاجر ،مولی کی طرح کاٹا جارہاہے ۔اس پر اظہار ِخیال کرتے ہوئے سید اطہر حسین شاہ بخار ی نے سرکارقبلہ مرشد ِگرامی حضرت سیّدنا ریاض احمد گوہرشاہی مدظلہ العالی کی سرفروش ذاکرین کے ساتھ ایک نشست کااحوال بیان کیا کہ اُس وقت چیچنیامیں مسلمانوں کا بہت زیادہ قتل ِعام ہوا۔اُس وقت سوسو دودوسو(100)کی تعدادمیں مسلمان مردو خواتین کو لائین میں کھڑا کر کے گولیاں ماردی جاتی تھیں۔ذاکرین نے سرکار سے سوال کیاکہ حضور !یہ مسلمانو ں کا اتنا قتل ِعام ہو رہا ہے ۔اُس علاقے کے جو اولیاء اکرام ہیں وہ اتنا قتل ِعام کیوں ہو نے دے رہے ہیں ۔وہ اس کو روکتے کیوں نہیں ہیں؟ اس کی وجہ کیا ہے ؟مرشد ِپاک نے دریافت فرمایا کہ مسلمان ہیں کون؟آج اگر ایک لائن میں ہندو کو کھڑا کر دیا جائے ،اُس کے ساتھ سکھ کو کھڑا کر دیا جائے ،انگریزکو ،عیسائی کو ،غیر مسلم کو کھڑاکردیاجائے اور آخرمیںمسلمان کو کھڑا کردیا جائے ۔کسی صاحب ِنظر کو کہا جائے کہ ان میں سے مسلمان کو تلاش کرو تو وہ اُن کے سینے دیکھے گااور سب کو کافر قرار دے گا۔آج جیسے ہندو کا سینہ ہے ،ویسے ہی مسلمان کا سینہ ہے ۔اس کے سینے میں بھی وہ نور ِالٰہی نہیں ہے اور غیر مسلم کے سینے میں تو ہے ہی نہیں۔اطہر حسین شاہ بخاری کا کہناتھاکہ دوستو!اگر آپ بازار سے دو چار کلو سیب خریدتے ہیں اور دکاندار اُن میں اچھے سیبوں کے ساتھ خراب سیب بھی ڈال دیتا ہے لیکن جب آپ گھر آکر دیکھتے ہیں تو اچھے پھل کے ساتھ خراب پھل بھی ہوتا ہے ۔تو آپ کیا کرتے ہیں تویقیناآپ اُن گلے سڑے سیبوں کو پھینک دیں گے کیونکہ وہ آپ کے کسی کام کے نہیں ہیں۔عزیز ساتھیو!ہم جب اللہ کی بارگاہ میں جائیں گے توقرآن پاک میں اللہ تعالیٰ فرماتا ہے کہ” پس کامیاب ہوا وہ شخص جو میرے پاس آیا قلب ِسلیم لے کر”جوچیز اللہ تعالیٰ کو چاہیے وہ آپ کا”قلب ِسلیم “ہے ۔وہ روشن قلب،اللہ کاذکرکرتا ہوا قلب،اللہ کی محبت کا گہوارہ قلب۔وہ اللہ تعالیٰ کو چاہیے۔جب اِس دِل کے اندر اُس کی محبت ہی نہیں ہے ۔جب اِس سینے کے اندر حضورسرکار دوعالمﷺکی محبت ہی نہیں ہے ،جب اِس سینے کے اندر اہل ِبیت کا عشق ہی نہیں ہے تو دوستو!ایسے جسم کو کیاکرنا؟اگر کوئی عورت ،مردوں جیسا لباس پہن لے تو اُس کے اندرمردوں والی خاصیتیں آجاتی ہیں!۔نہیں آتیں۔اس طرح اگر آپ مسلمانوں کی طرح لباس پہن لیںاور داڑھی رکھ لیں تو کیا آپ مومن بن جائیں گے ؟۔اگر کسی سکھ کویہ لباس پہنا دیا جائے،داڑھی رکھوادی جائے اور سَر پرامامہ شریف بھی سجا دیا جائے تو کیا وہ اسلام کا حامی بن جائے گا؟کیا وہ مومنین میں شمار ہوگا؟نہیں ،ہرگز نہیں کیونکہ اُس کا اندریعنی دل توسیاہ ہے دوستو!تو سب سے پہلے اندر سے تبدیلی لائیں یہ ایمان کا تقاضاہے ۔جب تک اندر ایمان ،اندر نور نہیں آئے گا۔اللہ تعالیٰ آپ کے ظاہر کو نہیں دیکھتا۔اللہ تعالیٰ فرماتاہے کہ یہ جو تم میری راہ میں قربانی کرتے ہو اِس کاگوشت اور خون مجھ تک نہیں پہنچتابلکہ تمہارا تقویٰ،نیت اور طہارت پہنچتی ہے ۔نیت کا تعلق آپ کے دل کے ساتھ ہے اور جب آپ کادل صاف ہو گاتو نیت بھی صاف ہو گی اور تمہارا اِرادہ پاک ہو گا اور پھر اُس وقت جو عمل کریں گے وہ مقبول ِبارگاہ ِالٰہی ہو گا۔جب دِل ہی صاف نہیں ہے تو آپ کے جسم سے نکلنے والے یا جسم سے سرزد ہونے والے اعمال بھی پاکیزہ نہیںہوں گے ۔دوستان ِعزیز!ایک پانی کی خاصیت ہے کہ آپ کے جسم کو پاک کرتا ہے اور ایک نور کی خاصیت ہے جو آپ کے باطن کو ،دل کو پاک کرتا ہے ۔پانی آپ کے لباس،بدن اور جسم کوپاک کرتاہے اوراللہ کے ذکر کا نور آپ کے قلب ،آپ کی روح کو طہارت دیتاہے اُس کو مصفی ٰکرتا ہے اُس کو چمکدار بناتاہے اورآج انجمن سرفروشان ِاسلام آپ کو یہی پیغام دیتی ہے کہ آئو اور اپنے باطن کو پاک کرو اپنے سینوں کو روشن ومنورکرلو۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ جس طرح آج پوری دنیا میں مسلمانوں کی حکومتیں ہیں،اُن کی Statesہیںبالکل اسی طرح ہلاکو خان اور چنگیز خا ن کے دور میں مسلمان ممالک موجود تھے ،اُن کی حکمرانی تھی ۔ جس طرح آج مسلمانوں کو قتل کیا جارہاہے اِسی طرح وہ آتے تھے اور مسلمانوں کا قتل ِعام کرتے جاتے تھے کیوںکہ وہ آج کی طرح متحد نہیں تھے ۔آج بھی وہ کشمیر ،فلسطین،شام ،بوسنیا اور برما(روہنگیا)میں اسی طرح ہمارے مسلمان بھائیوں کو قتل کررہے ہیںاورکوئی پوچھنے والانہیں ہے ۔آئیے!ہم آپ کو دعوت دیتے ہیں کہ اِس برے وقت میں ،اس نفسا نفسی کے دور میں،اِس آخری وقت میں اسم ِذات اللہ کو حاصل کریں اور جوہستی یہ نایاب دولت ِعظمیٰ بانٹ رہی ہے اُس کے ساتھ منسلک ہو جائیں ۔حضرت علی کرم اللہ وجہہ فرماتے ہیں کہ “جب تمہاری جان کو خطرہ ہوتوصدقہ دے کر بچ جایا کرو اور جب تمہارے ایما ن کو اور اسلام کو خطرہ ہو تواپنی جان دے کر اسلام کو بچالیا کرو”آج دوستو!اسلام کو خطرات درپیش ہیں ۔چاروں طرف سے اسلام کو کافروں نے گھیراہواہے ۔آئیے اپنے ایمان کو مضبوط کریںتاکہ جب جان دینے کا وقت آئے تو انجمن سرفروشان ِاسلام کے یہ سپاہی بھی کسی سے کم نہیں ہیںجب ہمیں اوپر سے حکم ہوگا تو ہم اپنی جانوں کا نذرانہ حضور ِپاکﷺکی ذات پہ قربان کرنے کیلئے تیار ہوںگے ۔ہم برما میں قتل ِعام کی پر زور اور شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیںاور اس سلسلے میں عالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشان ِاسلام پاکستان کی جانب سے بھرپور انداز میں پریس کے سامنے اپنا احتجاج بھی ریکارڈکروایاہے ۔ہم اس پلیٹ فارم پر حکومت ِوقت سے پرزور مطالبہ کرتے ہیںاقوام ِمتحدہ سے فوری رجوع کیاجائے اور اسلامی سٹیٹ ہونے کے ناطے سے ،پوری دنیا کے مسلمانوں کو ایک کرنے کے ناطے سے ،یہ ہمارااخلاقی اور مذہبی فرض بنتا ہے کہ جو مسلمان شہید کئے جارہے ہیں ،اُن پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑے جارہے ہیں۔اُن کی مدد کی جائے اور بین الاقوامی طور پر آواز بلند کی جائے۔ اقوام ِمتحدہ اور انسانی حقوق کی علمبردار قوتوں پردبائو ڈالا جائے کہ وہ اِس قدرانسانیت سوز اقدامات کو روکے۔ برما کی حکومت پر دبائو ڈالاجائے کہ اس طرح کے اقدامات سے باز رہے اور مسلمانوں کے حقوق کا تحفظ کرے اور یہی انجمن سرفروشان ِاسلام اور اولیاء اللہ کا پیغام ہے کہ پوری دنیامیں اسم ِذات اللہ کے ذریعے عالمی امن و محبت اور بھائی چارہ کی فضاکو قائم کیا جائے تاکہ پوری دنیا میں تمام مذاہب کے درمیان محبت و اخوت کو پروان چڑھایا جائے اور انسانیت کو تحفظ فراہم کیا جائے ۔ہم اللہ تعالیٰ سے دعا کرتے ہیں کہ مولا!مسلمانوں کی حفاظت فرمااور اُن کے سینوں میں اپنا اور حبیب ِپاک صاحب ِلولاک ﷺکا سچا اور پکا عشق پیدا فرما۔آمین۔

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestmailby feather
انجمن سرفروشان اسلام (رجسٹرڈ) پاکستان