الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا رسول اللہ الصلوٰ ۃ والسلام علیک یا حبیب اللہ
Subscribe: PostsComments

ماہانہ محفلِ گیارھویں شریف بسلسلہ محرم الحرام فیصل آباد

October 30, 2015

عالمی روحانی تحریک انجمن سرفروشانِ اسلام(رجسٹرڈ)فیصل آباد کے زیرِ اہتمام آستانہ عالیہ پر ماہانہ محفلِ گیارھویں شریف بسلسلہ محرم الحرام نہایت تزک و احتشام سے منعقد کی گئی۔جس میں نقابت کے فرائض عبدالعزیز قادری نے سرانجام دئیے۔محفلِ پاک کا باقاعدہ آغاز قاری طارق محمود قادری نے تلاوتِ کلامِ مجید سے کیا۔اسکے بعد حمدِ باری تعالیٰ کی سعادت حاجی محمد اصغر قادری نے حاصل کی۔ ملکِ پاکستان کے مشہورومعروف نعت خواں حضرات مرزا شاہد ،محمد سرفراز ،قاری ابوبکر نعیمی ،افسر علی رضوی ،محمد جاوید سجن اور عبدالمنان قادری نے اپنے مخصوص انداز میں بارگاہِ رسالتِ مآب ﷺ ،بارگاہِ غوث الوراءؓ اور امامِ عالی مقامؓ کے حضور گلہائے عقیدت ومحبت کے نذرانے پیش کرکے حاضرین کے دلوں میں محبت رسول ﷺکو مزید اجاگر کیا۔
محمد شفیق قادری نے اپنے خیالا ت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ماہِ محرم الحرام بڑی اہمیت و فضیلت کا حامل ہے کیونکہ محرم کامطلب بھی حرمت والا اور حرام کا مطلب بھی حرمت والا ہے۔محرم الحرام کے علاوہ رجب ،ذی القعداور ذوالحج بھی حرمت والے مہینے ہیں ۔محرم کی حرمت اور خاص طور پر 10 محرم یعنی یومِ عاشورہ کی حرمت ،آدم علیہ السلام سے لیکر مختلف انبیاء اکرام کے واقعات محرم میں ہوئے اور پھردس محرم کو امامِ عالی مقام شہیدِ کربلاامامِ حسین ؑ اور جان نثارانِ حسین ؑ کا واقعہ بھی دس محرم کو وجود میں آیا۔زمین وآسمان کی تخلیق،زمین پر پہلی بارش ،آدم ؑ ،ابراہیم ؑ ،موسی ٰ ؑ اور عیسیٰ ؑ کی ولادت،آدم ؑ کی توبہ قبول ہوئی ،حضرت نوع ؑ کی کشتی پار لگی،ابراہیم ؑ نارِ نمرود سے گلزاربن کے نکلے،موسی ٰ ؑ کو توریت ملی،اللہ تعالیٰ سے ہمکلام ہوئے،فرعون کے مقابلے میں فتح نصیب ہوئی اور خوشی میں روزہ رکھا گیا۔عیسی ٰ ؑ آسمان پر اُٹھائے گئے،حضرت ایوب ؑ بیماری سے شفایاب ہوئے ،حضرت یونس ؑ مچھلی کے پیٹ سے باہر آئے،حضرت سلیمان ؑ کو تختِ سلیمانی عطاء ہوا،حضرت یعقوب ؑ کو بینائی ملی،حضرت یوسف ؑ کنویں سے باہر نکلے،بادشاہ کی قید سے آزاد ہوئے اور تاریخ میں نہ بھولنے والا واقعہ بھی یومِ عاشورہ کو ہوا اور قیامت بھی دس محرم کو آئے گی لیکن صرف سال(سن ) کا پتہ نہیں ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ ہر دور میں حسینیت اور یزیدیت ہوتی ہے ۔حق کا ساتھ دینے والے حسینی ہیں اور حق کی مخالفت کرنے والے یزیدی ہیں ۔حضور ﷺ نے فرمایا کہ حسن ؑ اور حسینؑ میری آنکھوں کی ٹھنڈک ہیں جبکہ ایک اورجگہ فرمایا حسن ؑ اور حسین ؑ میرے دو پھول ہیں۔حسن ؑ اور حسین ؑ شبیہ مصطفی ﷺہیں ۔حضرت امامِ حسن ؑ سینہ سے لیکر سر مبارک تک اور حضرت امامِ حسین ؑ سینہ مبارک سے لے کر قدم مبارک تک حضور ﷺ کی شبیہ مبارک ہیں ۔اگر اُن کو شہید کردیا جائے اور یہ کہا جائے کہ نعو ذ بااللہ!یہ امیر المومنین کے باغی ہیں ۔توکہاں گیا ایمان ؟کہ یہ رسول اللہ ﷺکے ہم شکل ہیں ۔اُنکے بارے میں جب وہ پید اہوئے تو اُسی وقت حضورﷺنے فرمادیا تھاکہ میرے شہزادوں کو شہید کر دیا جائے گااور حضور پاک ﷺکی بات سے کوئی انکار کرسکتا ہے ؟تو شہید وہی ہوتا ہے جو حق کے راستے پر چلتے ہوئے اپنی جان قربان کرتاہے ۔شہادت کے بعد کیا ہوا۔امامِ عالی مقام حضرت امام حسین ؑ کو جب شہید کیا گیا توخون بہہ رہا تھا۔ ایک پرندہ آپ کے خون سے اپنے پروں کو بھگو کر مدینہ کی طرف پرواز کر گیا ۔ حضورِ پاک ﷺکے روضہ مبارک کے چکر لگائے جبکہ اُس کے پروں سے خون نکل رہا تھا ۔اہلِ مدینہ بڑے حیران ہوئے۔جب حالات و واقعات کا پتہ چلاکہ یہ جو خون لے کے آیا ہے یہ امامِ حسین ؑ کا خون مبارک ہے ۔اُن کو کربلا کے ریگزار میں شہید کر دیا گیا ہے۔ آج مدینہ مبارک میں جو کبوتر ہیں وہ اُسی نسل کے ہیں ۔ حضرت اُم معبدؓ کہتی ہیں کہ حضورِ پاک ﷺ ہمارے ہاں تشریف لائے ۔تھوڑی دیر آرام کیا ۔اُٹھے ۔کلی کی۔رات کو سو گئے ۔آپﷺ نے جس جگہ پر کلی کی اور کلی کا پانی جس جگہ جمع تھا ۔صبح کیا دیکھتے ہیں کہ اُس جگہ پر ایک خوبصورت درخت اُگ آیا ۔اُس پر پھل آگئے ۔جو بھوکاکھائے اس کی بھوک ختم ہو جائے ، جو پیاسا کھائے اس کی پیاس ختم ہو جائے، جو بیمار کھائے وہ شفا یا ب ہو جائے اور جو جانور کھائے اس کے تھنوں سے دودھ زیادہ آنا شروع ہو جائے۔ایک وقت آیا کہ ہم نے دیکھا کہ اُس کے پھل گر گئے۔پھر پتہ چلا کہ حضورِ پاک ﷺکا وصال ہو گیا ۔کچھ مدت گزری ۔پھل دوبارہ آگئے لیکن پہلے جتنا پھل نہیں آیا ۔کچھ عرصہ گزرا وہ پھل دوبارہ گر گئے اور اُ س کے ساتھ کَنڈے اُگ آئے، بڑے حیران ہوئے کہ کیا معاملہ ہوا؟پتہ چلا کہ حضرت علی المرتضٰیؓکو شہید کر دیا گیا، فرماتی ہیں کہ اسکے بعد پھل نہیں آیا ،پتے رہ گئے ،پتوں سے فیضیاب ہو تے رہے ۔پھر ایک وقت ایسا آیا کہ پتے بھی گر گئے۔درخت کے تنے سے تازہ تازہ خون نکل رہا ہے ۔پتے جھڑگئے ۔اس کی عجیب کیفیت ہے کہ رات کو درخت کے رونے کی آواز آتی رہی ۔صبح ہوئی تو پتہ چلا کہ امامِ حسین ؑ اور جان نثارا نِ حسین ؑ کو میدانِ کربلا میں شہید کردیاگیاہے ۔اسکے بعد نہ پھل آیا ۔نہ پتے آئے وہ درخت ثمر آور نہ ہو سکا ۔حضرت عبداللہؓ رسول کریم ﷺکو دیکھتے ہیں کہ داڑھی اور سر کے بال بکھرے ہو ئے ہیں ،گرد پڑی ہوئی ہے آپ ﷺ کے ہاتھ میں ایک شیشہ ہے اور شیشے میں خون ہے ۔پوچھتے ہیں کہ کیا ہوا تو آقا علیہ السلام فرماتے ہیں کہ صبح سے لے کر اب تک میدانِ کربلا سے حسین ؑ اور رفقائے حسین ؑ کا خون اکٹھا کر رہاہوں۔ مسلمانوں کے علاوہ دیگر مذاہب کے ماننے والوں نے بھی حضرت امامِ حسین ؑ کی قربانی کے حوالے سے اپنی عقیدت و محبت کا اظہار کیا ہے۔ مسٹر گاندھی نے کہا کہ میں نے داستانِ کربلا اُس وقت پڑھی جب میں نوجوان تھا اور اُس نے مجھے دم خو اور مسحور کردیا ۔ایک اور جگہ پرکہا کہ میں اہلِ ہند کے سامنے کوئی نئی بات پیش نہیں کرتا بلکہ میں نے کربلا کے ہیروز کی زندگی کا بخوبی مطالعہ کیا ہے اور اس سے مجھ کو یقین ہوا ہے ہندوستان کی اگر نجات ہو سکتی ہے تو ہم کو حسینیت کا راستہ اپنانا ہوگا۔حق کی راہ اپنانے کیلئے اپنے من کو صاف کرنا ہو گااور من کو صاف کرنے کیلئے مرشد حق حضرت سیدنا ریاض احمد گوھر شاھی مد ظلہ العالی کی روحانیت پر مبنی تعلیمات کوحاصل کرنا ہوگا جس کیلئے اجازتِ ذکر قلب ضروری ہے ۔
ممبر مرکزی مجلسِ شوریٰ حاجی محمد اویس قادری نے نئے ساتھیوں کو اجازتِ ذکرِ قلب دی۔قصیدہ مرشدی کے بعدحلقہء ذکر قلب منعقد کیا گیا جس کی سعادت امیرِ فیصل آبا د حاجی محمد سلیم قادری نے حاصل کی ۔ درودوسلام کے بعد قاری طارق محمود قادری نے خصوصی دعا کی ۔اختتامِ محفل پر تمام شرکاء محفل میں لنگر تقسیم کیا گیا ۔

11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (14) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (15) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (17) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (1) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (2) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (5) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (6) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (7) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (8) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (9) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (10) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (11) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (12) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (13)11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (4) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (3) 11vein Sharif Aastana ASI Fsd. 30-10-15 17 Muharram ul Hram (16)

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestmailby feather
انجمن سرفروشان اسلام (رجسٹرڈ) پاکستان